تازہ ترین
Home / Home / بسم اللہ کی فضیلت ۔۔۔ تحریر : بنتِ علی قریشی (راولپنڈی)

بسم اللہ کی فضیلت ۔۔۔ تحریر : بنتِ علی قریشی (راولپنڈی)


اللہ تعالیٰ نے مسلمانوں کو بعض چھوٹی چھوٹی چیزوں سے بڑی برکات عطاء فرمائی ہیں بسم اللہ الرحمٰن الرحیم اسی میں شامل ہے اس آیت کے ذریعے اللہ تعالیٰ کی غیبی مدد حاصل ہوتی ہے اس چھوٹی سی آیت میں اس قدر طاقت ہے کہ کوئی عام انسان تصور نہیں کر سکتا۔ وزیر کی بیٹی رومیا اک دفعہ گاؤں کے مشہور بازار میں چہل قدمی کے لیے گئی اسے علم ہی نا ہوا وہ چلتے چلتے مسلمانوں کی بستی میں آ گئی تھی اسے ایک آواز سنائی دی اور اس نے دیکھا کہ کافی لوگ آواز کے سمت جا رہے تھے۔ اس نے سوچا کیوں نا میں بھی دیکھو کہ یہ کیا ہے؟ جب وہاں گئی تو دیکھا اک مسجد میں کافی لوگ سفید قمیض شلوار پہنے داخل ہو رہے تھے اور آواز امام صاحب کی تھی جو خطبہ دے رہے تھے وہ کافی دیر وہاں کھڑی رہی آواز سنتی رہی امام صاحب بسم اللہ کی فضیلت بتا رہے تھے ۔
کافی دیر تک وہ وہاں کھڑی سنتی رہی جب وہ واپس گھر کی طرف روانہ ہوئی تو اس نے سوچا کہ وہ آج سے ہر کام کہ شروع میں بسم اللہ پڑھے گی رات کو کھانا کھانے سے پہلے بھی اس نے بسم اللہ پڑھی تو اس کے والد وزیر نے اس سے پوچھا کہ یہ تم نے کیا پڑھا ہے ؟ رونیا نے جب اپنے والد کو بتایا تو وہ آگ بھگولا ہو گۓ کہ یہ تو مسلم پڑھتے ہیں ہم تو ہندؤ ہیں آئندہ سے میں یہ پڑھتے ہوے نا سنواور آئندہ وہاں نا جانا اس کے بعد سے وزیر نے رونیا پر کافی روک تھام شروع کر دی وزیر کو ڈر تھا کہ رونیا اسلام قبول نا کر لے۔ لیکن وزیر کو علم نا تھا کہ جب اللہ کیسی کو ہدایت کے لۓ چنتا ہے تو اس کے سارے راستے آسان کر دیتا ہے۔ رونیا نے چھپ کر اسلام قبول کر لیا اور اپنی عبادت کرتی رہی۔ جب وزیر کو اس بات کا علم ہوا تو اس پر ٹوٹ پڑا اور اسے دوبارہ ہندؤ ہونے کی تلقین کرتا رہا لیکن رونیا نے اسلام نا چھوڑا۔ وزیر بہت پریشان ہو گیا کہ نا ہی میرا اس پر غصہ اثر کر رہا ہے اور اس نے اسلام قبول کر لیا ہے جب بادشاہ کو یا گاؤں والوں کو اس کا علم ہوگا تو شرمندگی کا سامنا کرنے پڑے گا اور مجھے سلطنت سے نکال دیا جاۓ گا۔ وزیر اور اس کی بیوی نے بہت سوچ بچار کر کے اپنی بیٹی کو بادشاہ سے سزا دلوانے کی ترکیب سوجی۔ بادشاہ اپنے ُمہر کی انگھوٹی وزیر کے پاس رکھواتا تھا۔ وزیر نے رات کے کھانے پر اپنی بیٹی رونیا کو انگھوٹی دی اور کہا اس کو کچھ دنوں تک اپنے پاس رکھ لو جب بادشاہ کو اس کی ضرورت ہو گی میں تم سے لے لونگا ۔
رونیا نے وہ انگھوٹی بسم اللہ پڑھ کر اپنے مخصوص کُرتے کے جیب میں ڈال دی ۔ وزیر کی بیوی نے ترکیب کے مطابق وہ انگھوٹی بعد میں وزیر کو دے دی۔ وزیر نے صبح ہوتے ہی وہ انگھوٹی گاؤں کے نہر میں پھینک دی۔ اگلے دن جب دربار میں بادشاہ نے وزیر سے انگھوٹی طلب کی تو وزیر نے کہا کہ وہ انگھوٹی میں نے اپنی بیٹی کے پاس رکھوائی ہے میں گھر جا کر اس سے لے کر آپکی خدمت میں حاضر ہوتا ہوں راستے میں جب وزیر بازار سے گذر رہا تھا اس نے سوچا اپنی بیٹی کے لیے مچھلی لے جاؤں ویسے بھی اس کا آج گھر میں آخری دن ہے۔ گھر جا کر اپنی بیٹی کو مچھلی دی اور کہا اس کو آج رات کھانے پر بنا دو۔
رات کے کھانے کے لیے جب رونیا نے بسم اللہ پڑھ کر مچھلی کو صاف کیا تو وہ انگھوٹی مچھلی کے پیٹ سے نمودار ہوئی.
رونیا کافی حیران ہوئی کہ میں نے تو کُرتے کی جیب میں رکھی تھی اور یہ یہاں پر کیسے آ گئی ۔ کافی دیر سوچنے کے بعد بھی جب اسے کچھ نا سوجا تو اس نے وہ انگھوٹی واپس بسم اللہ پڑھے کے جیب میں رکھ دی اور کھانے کی تیاری کرنے لگی۔ صبح جب ناشتے کے ٹیبل پر وزیر نے انگھوٹی طلب کی تورونیا نے بسم اللہ پڑھ کے انگھوٹی نکال کر اپنے والد کو دے دی ۔ وزیر اور سب گھر والے حیران ہو گئے کہ انگھوٹی اس کے پاس کیسے آ گئی جب رونیا نے پوچھا کہ کیا ہوا ؟ تو وزیر نے رونیا کو بتا دیا کہ میں نے اور تمہاری والدہ نے تمہارے لیے بادشاہ سے سزا دلوانے کی ترکیب سوچی تھی لیکن ہم حیران ہے کہ یہ تمہارے پاس کیسے آ گئی۔ رونیا نے کہا کہ بابا میں نے اسلام قبول کرنے کے بعد اپنے ساتھ بہت سے ایسے واقعات دیکھے ہیں کہ میں خود بہت حیران ہوں اور سب سے بڑا واقعہ تو اپ کے سامنے ہیں وزیر اس قدر متاثر ہوا کہ اس نے اسلام قبول کر لیا ۔
بسم اللہ پڑھنے کے کتنے برکات ہیں کہ وزیر نے انگوٹھی نہر میں پھیک دی تھی لیکن کیسے وہ انگوٹھی واپس رونیا کے پاس آ گئی نہر میں وہ انگوٹھی مچھلی نے کھا لی اور وہی مچھلی مچھیرے نے پکڑ لی اور بازار میں آ کر دوکاندار کو بھیج دی اور وزیر نے خرید لی اور وہ انگوٹھی واپس رونیا کہ پاس آ گئی۔ اور یہ سب کیسے ہوا اللہ کی مدد سے، تو اس کہانی سے ہم نے کیا سیکھا کہ آج سے ہم ہر کام کے شروع میں بسم اللہ پڑھیں گے۔
اِن شاء اللہ !

About Dr.Ghulam Murtaza

یہ بھی پڑھیں

پاکستان چیمپئنز لیگ 2024 :لاہور سکندرز اور کوئٹہ اسٹرائیکرز کافاتحانہ آغاز

فیصل آباد، (ویب اسپورٹس) محمد احسن کی ناقابل شکست سنچری کی بدولت لاہور سکندرز نے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے