Home / اہم خبریں / چترال کے بالای علاقے یارخون لشٹ میں سابقہ ایم پی اے حاجی غلام محمد کے دعوت پر کثیر تعداد میں لوگ پی ٹی ای پی میں شامل۔

چترال کے بالای علاقے یارخون لشٹ میں سابقہ ایم پی اے حاجی غلام محمد کے دعوت پر کثیر تعداد میں لوگ پی ٹی ای پی میں شامل۔

چترال، (گل حماد فاروقی) ضلع اپر چترال کے وادی یارخون لشٹ کے محتلف دیہات کا سابق رکن صوبای اسمبلی حاجی غلام محمد نے دورہ کیا۔ حاجی غلام محمد نے حال ہی میں پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹیرین میں اعلان کیا ہے اور پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹریین کے ٹکٹ پر پی کے ون کے نشست پر امیدوار حاجی غلام محمد کے سابقہ خدمات کے پیش نظر عوام نے ان کا والہانہ استقبال کیا۔حاجی غلام محمد نے وادی یارخون کے علاقے لشٹ، شوست اور آس پاس کے دیہات کا دورہ کیا جہاں ان کے سابقہ خدمات کے بناء پر علاقے کے لوگوں نے ان کو خوش آمدید کہا اور ان کے دعوت پر لوگوں نے پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹیرین کی بھر پور حمایت کرتے ہویے ان کو یقین دلایا کہ وہ انے والے انتحابات میں حاجی غلام محمد کا حسب سابق پھر پور انداز میں حمایت کرکے ان کو ایک بار پھر صوبای اسمبلی کے رکن منتحب کریں گے۔ انہوں نے حاجی غلام محمد کا شکریہ بھی ادا کیا کہ انہوں نے اپر چترال کے علاقوں میں اپنے دور میں کافی ترقیاتی کام کیے تھے جن میں سکولوں کی اپ گریڈیشن، سڑکوں کی تعمیر، آبنوشی اور آبپاشی سکیموں کی تکمیل وغیرہ شامل ہیں۔ اس موقع پر علاقے کے لوگوں نے ان کی اس اقدام کو سراہا کہ انہوں نے پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹیرین میں اعلان کیا اور اب ان کے ٹکٹ پر حلقہ پی کے ون کے امیدوار بھی ہے۔ علاقے کے عوام نے امید ظاہر کی کہ آنے والے انتحابات میں امید کی جاتی ہے کہ اس پارٹی کی حکومت صوبے آیے گی اور حاجی غلام محمد کی منحب ہونے کی صورت میں انہوں نے پرویز خٹک سے یہ بھی مطالبہ کیا کہ ان کو صوبای وزارت بھی دے تاکہ وہ اس پسماندہ اور دور آفتادہ علاقے کی بھر پور انداز میں خدمت کرسکے۔ علاقے کے عمایدین نے حاجی غلام محمد کو خوش آمدید کہتے ہویے ان کو یقین دہانی کرای کہ وہ ضرور اپنا قیمتی ووٹ ان کے حق میں استعمال کریں گے تاکہ اس پسماندہ علاقے میں ترقیاتی کاموں کا ایک بار پھر آغاز ہوسکے۔ علاقے کے لوگوں نے اس بات پر نہایت مایوسی کا اظہار کیا کہ اس سے پہلے انہوں نے سردار حسین کو بھی کامیاب کیا تھا مگر وہ ایم پی اے بننے کے بعد نہ تو دوبارہ یہاں ایے اور نہ کسی کا فون تک اٹنڈ کیا جس کی وجہ سے یہ علاقہ مزید پسماندہ رہا۔ ان لوگوں نے حاجی غلام محمد سے مطالبہ بھی کیا کہ صوبای اسمبلی کے رکن منتحب ہونے کی صورت میں اس علاقے میں ڈگری کالج برایے خواتین و حضرات کے ساتھ ساتھ ایک دیہی مرکز صحت یا ٹی ایچ کیو تعمیر کرنے کے ساتھ ساتھ مستوج سے یارخون بروغل سڑک کی تعمیر پر بھی کام کا غاز کرے۔ حاجی غلام محمد نے تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے محتصر نوٹس پر ان کا بہت والہانہ استقبال کرنے کے ساتھ ساتھ شدید سرد موسم کے باوجود کثیر تعداد میں جمع ہویے اور انہیں یقین دلایا کہ وہ اپنا قیمتی ووٹ ضرور ان کے حق میں استعمال کرتے ہویے انہیں رکن صوبای اسمبلی منتحب کریں گے تاکہ اس پسماندہ علاقے میں بھی ترقیاتی منصوبوں کا آغاز ہوسکے۔ اس موقع پر کافی لوگوں نے ان کے جماعت میں شمولیت کا اعلان بھی کیا۔ اس مہم کے دوران حاجی غلام محمد نے ضلع اپر چترال کے یار خون لشٹ کے محتلف علاقوں، پاور اونوچ، دیزگ، دوبار،کروش، میراگرام،کوتان لشٹ اور دیگر علاقوں کا دورہ کیا جس میں کثیر تعداد میں علاقے کے خواتین نے بھی ان کے قافلے میں شمولیت کا اعلان کرتے ہویے یقین دہانی کرای کہ وہ غلام محمد کو آنے والے انتحابات میں ضرور جتواکر صوبای اسمبلی کا رکن بنایں گے تاکہ ان پسماندہ ترین علاقو ں میں ایک بار پھر ترقیاتی کاموں کا جال بچایا جاسکے جسے پچھلے کیی دہاییوں سے نظر انداز کیا گیا۔ حاجی غلام محمد سابق ایم پی اے نے علاقے کے معززین کا شکریہ ادا کیا اور ان کو یقین دلایا کہ وہ ان کو کبھی بھی مایوس نہیں کریں گے اور آنے والے انتحابات میں اگر ان کو خدمت کا موقع ملا تو ان پسماندہ اور دور افتادہ علاقوں میں بھی ترقیاتی کاموں کے ساتھ ساتھ جدید تقاضوں کے مطابق عوام کو سہولیات فراہم کرنے کی بھر پور کوشش کریں گے۔

About Dr.Ghulam Murtaza

یہ بھی پڑھیں

قرض اور سود سے نجات کا طریقہ ۔۔۔ : سید سردار احمد پیرزادہ

پاکستان کا موجودہ معاشی نظام شہریوں کے جسم سے خون اور ہڈیوں سے گودا تک …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے